بابراعظم اور رضوان کے رن ریٹ کا ’’رولا‘‘ بھی ختم

حالیہ دنوں میں حقائق سے ناواقف کچھ نام نہاد کرکٹ مبصرین نے بابراعظم اور محمد رضوان کی بیٹنگ کو تنقید کا نشانہ بنایا، خصوصاً اسٹرائک ریٹ کے حوالے سے بہت تنقید کی گئی جو حقیقت کے بالکل برعکس تھی۔

اس کا اندازہ یہاں سے لگایا جاسکتاہے کہ 2022سے اب تک محمد رضوان اور بابراعظم کی اوپننگ جوڑی نے 7.74کے رن ریٹ سے رنز کئے ہیں جبکہ اوسط 44.10رنز فی شراکت ہے ۔

کوئی بھی دوسری پاکستانی جوڑی 20رنز فی شراکت اوسط سے اوپر نہیں جاسکی جبکہ رن ریٹ میں بابراعظم اور صائم ایوب کی جوڑی نے معمولی بہتر رہی ہے جن کا رن ریٹ 7.86رہا جو رضوان اور بابراعظم کے مقابلے میں صرف 0.12 رنزفی اوور زیادہ ہے۔

یہ اعدادوشمار پاک آئرلینڈ ٹی ٹوئنٹی سیریز 2024 تک مکمل ہیں

یہ اعدادوشمار واضح کررہے ہیں کہ بابراعظم اور محمد رضوان کی جوڑی کا کوئی بھی دوسری جوڑی مقابلہ نہیں کرسکتی ہے گزشتہ ڈھائی برس کے ریکارڈنے تو یہ بات واضح کرکے کلیئر پکچر دکھادی ہے لیکن اگر کوئی یہ کلیئر پکچر دیکھنے سے محروم ہے تو اُسے فوری آنکھوں کا چیک اَپ کرانا چاہیے۔

Check Also

ملتان سلطانز نے کوالیفائرمیچز کھیلنے کا ریکارڈ بناڈالا

ملتان سلطانز نے پی ایس ایل 2024 کے آخری رائونڈمیچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرزکو شکست …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔